Aap ki naatain main likh likh kar Naat Lyrics (Anas Younas) – Download Free Lyrics PDF & Ringtone Here

Aap ki naatain main likh likh kar Lyrics Naat is sung by Anas Younas. Here One can find Aap ki naatain main likh likh kar Naat Lyrics Pdf, Aap ki naatain main likh likh kar Naat Lyrics in Urdu, Hindi & English, Aap ki naatain main likh likh kar Naat Ringtone, Urdu Aap ki naatain main likh likh kar Naat Download, Arabic Aap ki naatain main likh likh kar Naat Mp3 Download. Get Aap ki naatain main likh likh kar naat lyrics here Below.

Aap ki naatain main likh likh kar Naat Mobile HD Wall Paper Free Download

Aap ki naatain main likh likh kar Naat Information:

Naat Aap ki naatain main likh likh kar
Singer Anas Younas
Music Label Hafiz

[vdgk_video_sticky videotype=”youtube” src=”https://youtu.be/X-1V8pJyV10″ height=”295″ width=”525″]

Aap ki naatain main likh likh kar Naat Lyrics By Anas Younas:

Aapki naatain main likh likh kar sunaon Apko
Kis tarah razi karun kaisay manaon Apko

Aapki naatain main likh likh kar sunaon Apko
Kis tarah razi karun kaisay manaon Apko

Aapko razi na kar paya tu mar jaun ga main
Choti choti kirchiyan ban kar bhikar jaun ga main

Zindagi ka is trah mujhko maza kya aye ga
Dil siyahee k bhanwar main dobta reh jay ga

Wasta dun apko main ap k hasnain ka
Yaar ghaar-e-sour ka siddique-e-konain ka

Ap to dushman k haq mai bhi dua kertay rahey
Bewafa logo say b har dam wafa kertay rahay

Ap to rehmat hi rehmat hain jahano k liey
Mery jaise be-amal aur be-thikano k liey

Apka hai roothna arz-o-samah ka roothna
Arsh ka sarey jahano k khuda ka roothna

Aap ki naatain main likh likh kar sunaon apko
Kis trah razi karun kaisay manaoun apko

Apki nazro say girta hai to mar jata hai wo
Raakh ban kar apnay he qadmon main bhiker jata hai wo

Is trah to aadmi khud aadmi rehta nahe
Saheb-e-imaan kya insaan b rehta nahe

Kaisay kaisay dushmano par reham khaya aap nay
Aag say kitney he logon ko bachaya ap nay

Apnay jooton apnay saaye mai bhita dijiye mujhey
Apka nacheez khadem hun dua dijiye mujhey

Zindagi ke taiz lehrun main na beh jaoun kahen
Gard ban kar rastay main he na reh jaoun kahen

Apko khatoon-e-jannat aur Ali ka wasta
Apko farooq-o-usman-e-ghani ka wasta

Aap ki naatain mai likh likh kar sunaon apko
Kis tarah razi karun kaisay manaoun apko

Zindagi ko ak boht hi mushkil safar darpaish hai
Ek mushkil imtehaan bar-e-digar darpaish hai

Soch main doba hoa hon soch hi main qaid hon
Bebasi ghairey hoey hai bebasi main qaid hon

Toot-tey jatey hain saray aasray jitnay b hain
Be-asar hain log sab chotay baray jitnay b hain

Kis qadar kitna zaruri hai sahara apka
Mere qismat hi badal dey ga ishara apka

Log aksar shair-e-ashaab kehtay hain mujhay
Unki khatir roz-o-shab betaab kehtay hain mujhay

Be-amal hon maghfirat ka aik sahara hai zarur
Apka har ek sahabi jaan say pyaara hai zarur

Aap ki naatain main likh likh ker sunaoun apko
Kis tarah razi karun kaisay manaoun apko

Mere khuwahish hai k unke khoobian likhta rahun
Shoq say main aasman ko aasman likhta rahun

Un k sadqay ap mujh per meharbani kijeah
Merey haal-e-zaar par aaqa tawajja dijiah

Aapsy rishta ghulami ka sadda qaim rahay
Khuwajgi aur bandagi ki yeh fiza qaim rahay

Aapki naatain main likh likh kar sunaon Apko
Kis tarah razi karun kaisay manaon Apko

Mery sir par mushkilon ka aasman girnay ko hai
Zarra-e-nacheez par koh-e-girah girnay ko hai

Ghup andhairay main khara hun ay hira k aaftab
Purza purza ho rahe hai mere khusheyun ki kitaab

Mery haq main apney khaliq say dua farmaiye
Ae mere aaqa karam ki intiha farmaea

Dekhty hain tu mujhey be-aasra kehtey hain log
Ehd-e-mazi ki koe bholr sada kehtay hain log

Kis trah rokun main is toofan aur sailaab ko
Zehn say kaisy nikalun khofnak is khuwaab ko

Mere apni saans b ab to meray bus main naen
Thak gay hai chalty chalty ab mery loh-e-jabeen

Dekh kar dushwaar rahein zindagi ghabra gae
Mery ghar tak aaty aaty roshni ghabra gai

Sabz gumbad ki taraf uth tee hain nazrain baar baar
Apke rehmat ko daita hai yeh sada khaaksaar

Khaliq-e-arzo smah say ab dua kijiye huzoor
Meharban ho jaye mujh aasi per rabb-e-ghafoor

Mere himmat sey ziada hai pareshani ka booj
Main utha sakta nahe apne tan-e-fani ka booj

Rah pe chaltay hoay ab dagmaga jata hun main
Saans lanay par b ab to larkhara jata hun main

lab hila dijiye mere khatir dua k wastay
Reham ferma dijiye muj per khuda k wastay

Aapki naatain main likh likh kar sunaon Apko
Kis tarah razi karun kaisay manaon Apko


Aap ki naatain main likh likh kar Naat Lyrics in Urdu By Anas Younas:

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کروں کیسے مناؤں آپ کو

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کروں کیسے مناؤں آپ کو

آپ کو راضی نہ کر پایا تو مر جاؤں گا میں
چھوٹی کرچیاں بن کر بکھر جاؤں گا میں

زندگی کا اس طرح مجھ کو مزا کیا آئے گا
دل سیاہی کے بھنور میں ڈوبتا رہ جائے گا

واسطہ دوں آپ کو میں آپ کے حسنین کا
یار غار ثور کا صدیق کونین کا

آپ تو دشمن کے حق میں بھی دعا کرتے رہے
لوگوں سے بھی ہر دم وفا کرتے رہے

آپ تو رحمت ہی رحمت ہیں جہانوں کے لئے
میرےجیسے بے عمل اور بے ٹہکانوں کے لئے

آپ کا ہے روٹھنا ارض و سما کا اٹھنا
عرش کے سارے جہانوں کے خدا کا روٹھنا

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کرو کیسے مناؤں آپ کو

آپ کی نظروں سے گرتا ہے تو مر جاتا ہے وہ
راکھ بنکر قدموں میں گر جاتا ہے وہ

اس طرح تو آدمی خود آدمی رہتا نہیں
صاحب ایمان کیا انسان بھی رہتا نہیں

کیسے کیسے دشمنوں پر رحم کھایا آپ نے
آگ سے کتنے ہی لوگوں کو بچایا آپ نے

اپنے جوتوں اپنے سائے میں بٹھا دیجئے مجھے
آپکا ناچیز خادم ہوں دعا کی دیجئے مجھے

زندگی کی تیز لہروں میں بےنہ جاؤں کہیں
گرد بن کر رستے میں ہی رہ نا جاؤں کہیں

آپ کو خاتون جنت اور علی کا واسطہ
آپکو کو فاروق عثمان غنی کا واسطہ

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کروں کیسے مناؤں آپ کو

زندگی کو ایک بہت ہی مشکل سفر درپیش ہے
ایک مشکل امتحان بار دگردرپیش ہے

سوچ میں ڈوبا ہوا ہوں سوچ ہی میں قید ہوں
بے بسی گھیرے ہوئے ہیں بے بسی میں قید ہوں

ٹوٹتے جاتے ہیں سارے آسرے جتنے بھی ہیں
بے اثر ہے لوگ سب چھوٹےبڑے جتنے بھی ہیں

کس قدر کتنا ضروری ہے سہارا آپ کا
قسمت ہی بدل دے گا اشارہ آپ کا

لوگ اکثر شہری حساب کہتے ہیں مجھے
ان کی خاطر روزوشب بیتاب کہتے ہیں مجھے

بے عمل ہوں مغفرت کا ایک سہارا ہے ضرور
آپ کا ہر ایک صحابی جان سے پیارا حضرور

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کروں کیسے مناؤں آپ کو

میری خواہش ہے کہ ان کی خوبیاں لکھتا رہوں
شوق سے آسمانوں کوآسمان لکھتا رہا ہوں

ان کے صدقے آپ مجھ پر مہربانی کیجئے
میرے حال زار پر آقا توجہ دیجئے

آپ سے رشتہ سدا غلامی کا قائم رہے
خواجگی اور بندگی کی یہ فضا قائم رہے

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کروں کیسے مناؤں آپ کو

میرے سر پر مشکلوں کا آسمان گرنے کو ہے
ذرہ ناچیز فا پرکوہ گراں گرنے کو ہے

گوپ اندھیرے میں کھڑا ہوں اے حرا کے کےآفتاب
پرزہ پرزہ ہو رہی ہے میری خوشیوں کی کتاب

میرے حق میں اپنے خالق سے دعا فرمائیے
اے میرے آقا کرم کی انتہا فرمائیے

آتی ہے تو مجھے بے آسرا کہتے ہیں لوگ
عہد ماضی کی کوئی بھولی صدا کہتے ہیں لوگ

کس طرح روکو میں اس طوفان اور سیلاب کو
ذہن سے کیسے نکالوں خوفناک اس خواب کو

میری اپنی سانس بھی اب تو میرے بس میں نہیں
تھک گئ ہی چلتے چلتے اب میری لوح جبیں

دیکھ کر دشوار راہین زندگی گھبرا گئی
میرے گھر تک آتے آتےروشنی گبرا گی

سبز گنبد کی طرف اٹھتی ہیں نظریں بار بار
آپ کی رحمت کو دیتا ہے یہ صدا خاکسار

خالق عرض وسما سے اب دعا کیجئے حضور
مہربان ہوجائے مجھ اسی پراب رب غفور

میری ہمت سے زیادہ ہے پریشانی کا بوجھ
میں اٹھا سکتا نہیں اپنے  تنے فانی کا بوجھ

راہ پہ چلتے ہوئے اب ڈگمگا جاتا ہوں میں
سانس لینے پر بھی اب تو لڑکھڑا جاتا ہوں میں

لب ھلا دیجئے میری خاطر دعا کے واسطے
رحم فرما دیجیے مجھ پر خدا کے واسطے

آپ کی نعتیں میں لکھ لکھ کر سناؤں آپ کو
کس طرح راضی کرو گی سے بنا ہوا آپ کو

FOR LATEST NAAT SONG LYRICS CLICK HERE.


Download Aap ki naatain main likh likh kar Mp3 Naat & Ringtones For Free:


Note: If you find any mistakes in the lyrics, Please let us know below comment section. We will very thankful to you guys. Do you believe ‘Sharing is Caring’? If you Believe than please share these lyrics with your friends, family members and also with your loved ones so they can also enjoy it.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *